MyLands.pk & Shop

مائی لینڈز ڈاٹ پی کے پراپرتی ڈیلرز کے لیے پروگرام ہے۔ اس میں آپ جائیداد کا ریکارڈ رکھ سکتے ہیں اور سرچ بھی کر سکتے ہیں۔ یہ ریکارڈ آپ صرف اپنے لیے بھی محفوظ کر سکتے ہیں یا اسے پبلک بنا سکتے ہیں ۔ پبلک ریکارڈز سب لوگ دیکھ سکتے ہیں۔ اپنے آفس کے رجسٹر کھاتوں سے جان چھڑائیں اور آن لائن کے طرف آئیں۔ ای سائیٹ.پی کے، آپکے کاروبار کے لیے ای کامرس ویب سائیٹ

پیر، 27 مئی، 2019

پیر چناسی سفر

السلام علیکم، میں ڈیوائین کلب کو فیملی ٹورز کے لیے اپنی فہرست میں پہلا نمبر دیتا ہوں۔ ہم ان کے ساتھ پیر چناسی کے سفر پر گئے اور سطح سمندر سے 9500 فٹ بلند پہاڑ کی اونچائی پر خوب لطف اندوز ہوئے۔ مناسب خرچہ، اچھے اتنظامات اور بہترین تفری۔
عامر شہزاد
aamir@esite.pk
+923005393652

اتوار، 19 مئی، 2019

اف یہ غیر ضروری ٹیگز 😠 اور ان فرینڈ

میں نے اپنے ایک فیس بک فرینڈ کی وال پر یہ پوسٹ ڈالنے کی غلطی کر دی
السلام علیکم
Thank you for being my friend on the Facebook. Just a friendly reminder, I request you to do NOT tag/message me in any unnecessary images, videos, posts etc please. And do visit my links below.
مطلب یہ کہ مجھے غیر ضروری ٹیگ وغیرہ نہ کریں، شکریہ
Aamir Shahzad
RoshanTech
http://esite.pk
ویسے تو اکثر لوگوں کو اس پر اعتراض نہیں ہوتا مگر یہ ان خاص لوگوں میں شامل ہیں جنہیں میری یہ پوسٹ اپنی وال پر اچھی نہیں لگی۔ ان کا یہ جواب موصول ہوا۔
بھائی میاں السلام علیکم ۔ فرینڈ ریکوئسٹ قبول کرنے کا شکریہ ۔ البتہ نسخہ برائے ترکیب استعمال دوستی ، بجائے ان باکس کرنے کے میری ٹائم لائن پہ شیئر کرنے سے مجھے ایسے محسوس ہو رہا ہے جیسے مسجد کے لاؤڈ سپیکر پہ اعلان کیا جا رہا ہو کہ بھائیو یہ ہمارے گھر مہمان تو بن رہا لیکن ہمیں خدشہ ہے کہ یہ بد تمیزی ضرور کرے گا تو آپ گواہ رہیں کہ ہم اسے پیشگی آگاہ کر رہے ہیں کہ یہ یہ حرکت کرے گا تو اچھا نہ ہو گا 😀 ۔ ہاں ساتھ ہی اسے ہم اپنی دکان کا پتہ بتائے دیتے ہیں کہ ہماری کٹی سے سودا خریدے گا تو فائدے میں رہے گا ۔
بھائی صاحب میں ۔۔۔ کے نام سے تھا ۔ اسی زمانے سے آپ سے غائبانہ تعارف تھا ۔ لیکن اب مجھے افسوس ہے کہ مجھے آپ کو ان فرینڈ کرنا پڑے گا ۔ مجھے آپ سے اس تاجرانہ رویے کی توقع نہ تھی ۔ سلامت رہیں
 (نوٹ: کچھ جگہوں پر میں نے خود ہی ۔۔۔ لکھ دیے تا کہ ان دوست کی پہچان خفیہ رہے، کیا پتہ اگر ان کا نام لکھا تو میری یہ بلاگ پوسٹ بھی ان کو اچھی نہ لگے)
میری ان سے مزید یہ گفتگو ہوئی۔
میں:
وعلیکم السلام
معزرت
تفصیل میں بعد میں بتاؤں گا
اگر آپ نے بلاک نہیں کر دیا تو
دوست:
بلاک نہیں کیا صرف ان فرینڈ کیا ہے بھیا 😀
میں:
السلام علیکم  ۔۔۔ بھائی، ایک دفع پھر معذرت۔ کچھ تفصیل بتاتا ہوں۔
مجھے آپ سمیت کچھ لوگوں کی فرینڈ ریکوسٹ آئی ہوئی تھی۔ یہ میرا عام طریقہ ہے کہ نئے دوستوں کو ٹیگز کے حوالے سے بتاتا ہوں، اور ساتھ ہی اپنے سیگنیچر لگاتا ہوں، یعنی نام اور ویب سائیٹ۔ ان باکس بھی کرتا ہوں اور ٹائم لائن پر شیئرنگ بھی کرتا ہوں۔ کیونکہ کچھ لوگ اونچا سنتے ہیں 😀۔  میں نے آپ کے ساتھ کوئی امتیازی سلوک نہیں کیا۔
وقت کی کمی کی وجہ سے میں سب کی پروفائل چیک نہیں کر سکا، ورنہ شائد آپ کو پوسٹ نہیں جاتی۔ آپ شائد پہلے میری فرینڈ لسٹ میں شامل تھے؟ اور شائد میں نے ٹیگز ہی کی وجہ سے ان فرینڈ کیا ہو گا۔
اف یہ غیر ضروری ٹیگز 😠! میں ان سے بہت چڑتا ہوں۔ اس لیے اکثر لوگوں کو بتائے بغیر ہی ان فرینڈ کر دیتا ہوں۔
آپ کو ٹائم لائن پر میری شیئرنگ اچھی نہیں لگی تو آپ کو اسے فورا ختم کر دینا چاہیے تھا (آپ نے خود ہی شیئرنگ کی سہولت دی رکھی تھی) اور آپ مجھے  ان باکس میں گلہ کر سکتے تھے، جو کہ ایک قابل قبول عمل ہے۔ ان فرینڈ کرنا غیر ضروری تھا 😶۔
دوسرا آپ کو میرے سیگنیچر، یعنی نام اور ویب سائیٹ۔ برے لگے۔ یہ بھی خصوصی طور پر آپ کو تنگ کرنے کے لیے نہیں لگائے۔ میں عام طور پر پوسٹ یا تبصروں کے ساتھ لگاتا ہوں۔
امید ہے کہ آپکا کچھ گلہ کم ہو گیا ہو گا۔ میں اب آپ کو فرینڈ ریکوسٹ بھیجنے لگا ہوں۔ مناسب لگے تو قبول کر لیں۔ ورنہ پھر بھی آپ میرے دوستوں میں شمار رہیں گے۔
مخلص
عامر شہزاد
eSite.pk
(آپ بے شک میری ہٹی ہے کچھ نہ خریدیں 😛)
دوست:
نہیں اب تو تمہاری ہٹی دیکھنی پڑی گے کبھی وزٹ کر کے 😀
میں:
آپکی ۔۔۔ (ویب سائیٹ) تو شاید ختم ہو گئی تھی۔
۔۔۔
دوست: 
۔۔۔
آپکا بلاگ کیا ہوا ؟
میں:
میں نے یہ عقلمندی کی کہ اپنی ویب سائٹ کی بجائے بلاگ سپاٹ پر بلاگ بنایا، جو کہ ابھی بھی چل رہا ہے
http://asakpke-urdu.blogspot.com

جمعرات، 10 جنوری، 2019

حسنہ تنظیم اٹک

اٹک شہر کے ایک نوجوان "باسط" بھروسہ طرز قرضہ حسنہ (مائیکروفائینیسنگ) کا کام کر رھے ھیں.


حسنہ تنظیم اٹک میٹنگ، ایک پرانی تصویر


منگل، 4 دسمبر، 2018

ایجوکیشنل گیمنگ سسٹم (روشن ٹیک جی ایم او ایس) کو کمپیوٹر پر انسٹال کرنے کا طریقہ

ایجوکیشنل گیمنگ یو ایس بی کو قانونی طور پر جتنے مرضی پی سی یا لیپٹاپ پر انسٹال بھی کریں

ویڈیو


سکرین شاٹ


جمعہ، 23 نومبر، 2018

الف لیلہ یا الف لیلیٰ

"الف لیلہ یا الف لیلیٰ‎‎ کہانیوں کی مشہور کتاب جسے آٹھویں صدی عیسوی میں عرب ادبا نے تحریر کیا اور بعد ازاں ایرانی، مصری اور ترک قصہ گو نے اضافے کیے۔ پورا نام (اَلف لیلۃ و لیلۃ) ایک ہزار ایک رات۔ کہتے ہیں کہ سمرقند کا ایک بادشاہ شہر یار اپنی ملکہ کی بے وفائی سے دل برداشتہ ہو کر عورت ذات سے بدظن ہو گیا۔ اور اُس نے یہ دستور بنا لیا کہ ہر روز ایک نئی شادی کرتا اور دلہن کو رات بھر رکھ کر صبح کو قتل کر دیتا۔ سلسلہ اسی طرح چلتا رہا تو عورتوں کی تعداد کم پڑنے لگی، بادشاہ کے وزیر نے بھی اسے رائے دی کہ ایسا کب تک چلے گا اور کوئی شادی کرنے کو بھی راضی نہیں ہوتی۔ بادشاہ نے اسے کہا تم اس کا بندو بست کرو ورنہ تمہیں قتل کر دیا جائے گا۔ آخر وزیر کی لڑکی شہر زاد نے اپنی صنف کو اس عذاب سے نجات دلانے کا تہیہ کر لیا اور باپ کو بمشکل راضی کرکے بادشاہ سے شادی کر لی۔ بادشاہ شہریار قصوں کہانیوں کا بہت شوقین تھا۔ اُس نے رات کے وقت بادشاہ کو ایک کہانی سنانا شروع کی، رات ختم ہو گئی مگر کہانی ختم نہ ہوئی۔ کہانی اتنی دلچسپ تھی کہ بادشاہ نے باقی حصہ سننے کی خاطر وزیر زادی کا قتل ملتوی کر دیا۔ دوسری رات اس نے وہ کہانی ختم کرکے ایک نئی کہانی شروع کر دی۔ جب کہانی کلائمیکس پہ پہنچتی وہ اسے کل کے لیے ملتوی کر دیتی، اس طرح ایک ہزار ایک رات تک کہانی سناتی رہی۔ اس مدت میں اُس کے دو بچے ہو گئے اور بادشاہ کی بدظنی جاتی رہی۔"، ویکیپیڈیا


ایجوکیشنل گیمنگ یو ایس بی